بھارت : نفرت پھیلانے والے ہندو انتہا پسند نرسنگھانند کی پولیس کو جان سے مارنے کی دھمکیاں

 

Thumb-kms-urduنئی دہلی 15 جنوری (کے ایم ایس) بھارتی ریاست اتراکھنڈ میں پولیس نے جیسے ہی ہریدوار نفرت انگیز تقاریر، جن میں مسلمانوں کی نسل کشی کا کال دی گئی تھی، مقدمے میں پہلی گرفتاری عمل میں لائی بدنام زمانہ مسلم مخالف ہندو راہب یاتی نارسنگھانند سرسوتی نے پولیس کو جان سے مارنے کی دھمکی دے دی ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق سرسوتی ایک وائرل ویڈیو میں 13 جنوری کو جتیندر نارائن سنگھ تیاگی( وسیم رضوی) کی گرفتاری کیلئے آنے والے پولیس افسروںکو ”تم سب مروگے“ کہتے ہوئے سنے جاسکے ہیں۔ وسیم رضوی جنہوں نے ہندو مذہب اختیار کر لیا ہے ہریدوار نفرت انگیز تقاریر مقدمے کے ملزموں میں سے ایک ہے ۔ہند و انتہا پسندوں نے اپنی نفرت انگیز تقاریر کے دوران کھل کر مسلمانوں کے قتل عام کا مطالبہ کیا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: