بی جے پی کا ایجنڈا سماج کو تقسیم کر کے اپنا سیاسی مفاد حاصل کرنا ہے: اکھلیش یادو

لکھنو05 اپریل (کے ایم ایس)بھارتی ریاست اترپردیش میں سماجو ادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو نے یوگی حکومت کی زیرو ٹالیرنس پالیسی کو محض دکھاوا قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ بی جے پی کے دورحکومت میں تھانے، تحصیل اورکلکٹریٹ سب بدعنوانی کے اڈے بن چکے ہیں۔
کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق اکھلیش یادو نے ایک بیان میںکہا کہ انتظامیہ معصوم لوگوں اور غریبوں کو ہراساں کررہی ہے اور کسانوں پر بلڈوزر چلایا جا رہا ہے جبکہ جھوٹ کے سہارے اپنی کامیابیاں شمار کروائی جارہی ہیں۔اکھلیش یادو نے کہا کہ بی جے پی کے دورحکومت میں دعوئوں کا فریبی تاج محل تیار کرنے کا کوئی حساب نہیں ۔انہوں نے کہاکہ اترپردیش میں بی جے پی کی سابقہ حکومت میں پانچ لاکھ نوکریاں دئیے جانے کا دعوی ٰکیا گیا تھا جس کا ڈاٹا آج تک نہیں دکھایا گیا کہ کس کو کہاں نوکری ملی۔ اب بی جے پی حکومت 100دن میں دس ہزار نوکریاں دینے کا دعویٰ کررہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ بی جے پی کے قول و فعل کو سب نے دیکھا ہے اور بی جے پی حکومت کے متعدد اعلانات محض جھانسہ ثابت ہوئے ہیں۔انہوں نے کہاکہ نوجوانوں کونوکریاں، روزگار دینے کے حوالے سے بی جے پی حکومت پوری طرح بے حس ہے اورنوجوان بے روزگاری کی وجہ سے خودکشیاں کرنے پرمجبور ہیں۔ایس پی صدر نے کہا کہ میرٹھ میں بی جے پی کے ایک رہنما کے غنڈوں کے ذریعے ویج بریانی بیچنے والے ایک غریب کی لاچاری کا فائدہ اٹھاکر اس کی روزی روٹی چھین لینا بی جے پی حکومت میں جنگل راج کا مظہر ہے۔ انہوں نے کہا سب کا ساتھ سب کا وکاس اور سب کا وشوا س کے نعرے سے لوگوں کو گمراہ کرنے میں ماہر بی جے پی قیادت کو اس بات کا جواب دینا ہوگا کہ اترپردیش میں نفرت پھیلا کر کیوں مظالم ڈھائے جارہے ہیں۔اکھلیش یادو نے کہاکہ بی جے پی کا ایجنڈا سماج کو تقسیم کر کے اپنا سیاسی مفاد حاصل کرنا ہے اور عوام اس کی سچائی سے پوری طرح سے آگاہ ہیں۔

Leave a Reply

%d bloggers like this: