مقبوضہ کشمیر میں کرپشن کے باعث لوگوں کا سانس لینا مشکل ہو گیا ہے: محبوبہ مفتی

 

جموں 15ستمبر ( کے ایم ایس )
بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں وکشمیر میں پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی( پی ڈی پی) کی صدر محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ مقبوضہ علاقے کرپشن میں اس قدر اضافہ ہوا ہے کہ لوگوں کے لئے سانس لینا بھی مشکل ہوگیا ہے۔
کشمیر میڈیاسروس کے مطابق محبوبہ مفتی نے ضلع پوچھ کی تحصیل سرنکوٹ میںپارٹی کارکنوں کے ایک اجلاس سے اپنی تقریر کے دوران کہا کہ جس ترقی کے نام پر دفعہ 370 ہٹائی گئی تھی اس ترقی کا کہیں کوئی نشان نظر نہیں آرہا ۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کا تشخص بحال ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کے لوگوں کو ان کی ہی زمینوں سے نکالا جارہا ہے اور یہاں ہر قسم کی افراتفری ہے۔محبوبہ مفتی کا کہنا تھا کہ جموں و کشمیر میں باہر کے لوگ کام کرنے کے لئے آرہے ہیںجس کے سبب یہاں کے لوگ بیروزگار ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کسان قریباً ایک برس سے زائد عرصے سے سراپا احتجاج ہیں لیکن کوئی ان کی بات نہیں سن رہا ۔ خبر رساں ادارے ”ساﺅتھ ایشین وائر “ کی ایک خبر کے مطابق محبوبہ مفتی نے مزید کہا کہ جموں وکشمیر میں ترقی کا کوئی نشان ہی نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت نے ترقی کے بہانے کی آڑ میں دفعہ 370 اور 35A کو منسوخ کیا لیکن جموں و کشمیر میں کہیں کوئی ترقی نظر نہیں آرہی ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: