بھارت:آگرہ میں بی جے پی رہنما نے اپنے دوست کا سر قلم کر دیا

آگرہ 06اگست(کے ایم ایس)بھارتی ریاست اتر پردیش کے شہر آگرہ میںبھارتیہ جنتا پارٹی کے ایک رہنما نے اپنے تاجر دوست اور زعفرانی پارٹی کے کارکن کا سر قلم کر دیاہے۔
کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق بھارتی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ ٹنکو بھارگوا نے جو بی جے پی کا ایک ضلعی عہدیدار ہے، جمعرات کی رات کو نوین ورما نامی اپنے دوست کا سر قلم کر نے سے پہلے اس کوگولی ماردی ۔بھارگوا کو پولیس نے جمعہ کی صبح اس وقت پکڑ لیا جب وہ قصبے کے مضافات میں واقع جنگلاتی علاقے سکندرا آرسینا کے قریب اپنے ایک دوست کی مدد سے کٹے ہوئے سر اور لاش کو چھپانے کی کوشش کر رہا تھا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ آگرہ میں پولیس حکام نے بتایا کہ بھارگوا کی کار سے کٹا ہوا سر اور لاش برآمد ہوئی اور اس نے پوچھ گچھ کے دوران اعتراف جرم کرلیاہے۔پولیس کے حوالے سے رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بھارگوا نے ورما کو جمعرات کی شام کو ایک شراب پارٹی میں شامل ہونے کے لیے فون کیا۔ بھارگوا نے بعد میں اسے گولی مار کر قتل کر دیا اور پھر اس کا سر کاٹ دیا۔آگرہ میں ایک سینئر پولیس افسر نے بتایا کہ قاتل نے مقتول کا سر کاٹ دیا اور اس کے چہرے کو مسخ کردیا تھا تاکہ اس کی شناخت نہ ہوسکے۔انہوں نے کہاکہ اس بہیمانہ قتل کے پیچھے محرکات کا ابھی تک پتہ نہیں چل سکا ہے تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ بی جے پی رہنما کا مقتول کی بیوی کے ساتھ معاشقہ چل رہا تھا اور وہ اس کا خاتمہ کرنا چاہتا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: