امریکا نے ایرانی پیٹرو لیم مصنوعات خریدنے والی بھارتی کمپنی پر پابندی عائد کردی

iStock-1133546968-696x464واشنگٹن 07اکتوبر(کے ایم ایس)امریکہ نے ایک بھارتی کمپنی پر پابندی عائد کردی ہے جس نے ایران سے پٹرولیم مصنوعات خریدنے کا معاہدہ کیاتھا۔
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق یہ پابندیاں بھارت کے وزیر خارجہ ایس جے شنکر کے واشنگٹن کا دورہ مکمل کرنے کے فورا بعد لگائیں گئیںجہاں انہوں نے وزیر خارجہ انٹونی بلنکن،وزیر دفاع لائیڈ آسٹن ، وزیر تجارت گیل ریمونڈو اور قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان سمیت کئی اعلی حکام سے ملاقاتیں کیں ۔امریکی محکمہ خزانہ نے ایک بریفنگ میں کہا کہ بھارتی کمپنی سمیت متعدد بین الاقوامی کمپنیوں نے ایران کی کمپنی ٹرائی لین کے ذریعے لاکھوں ڈالر مالیت کی پیٹرولیم مصنوعات بالخصوص میتھانول اور تیل درآمد کیاہے۔بھارت کی پیٹرو کیمیکل کمپنی دیبلجی پیٹروکیم پرائیویٹ لمیٹڈ کے ساتھ ساتھ متحدہ عرب امارات کی ایک کمپنی اور ہانگ کانگ کی کچھ کمپنیاں بھی امریکی پابندیوں کی فہرست میں شامل ہیں۔محکمہ خزانہ نے کہا کہ پابندیوں کے تحت آٹھ کمپنیوں کی امریکہ میں موجود تمام جائیدادیں اور مفادات یا جن میں ان کا کم از کم 50فیصد حصہ ہے انہیںبند کیاجانا چاہیے اور اس کی رپورٹ دفتر برائے کنٹرول غیر ملکی اثاثہ جات (OFAC)کو دی جانی چاہیے۔ بریفنگ کے دوران ایک صحافی کے یہ پوچھنے پر کہ کیا بلنکن کے ساتھ جے شنکر کی ملاقات کے دوران ایران پر پابندیوں کا معاملہ زیر بحث آیا تومحکمہ خارجہ کے نائب ترجمان دیو پٹیل نے کہا انہوں نے اپنی نیوز کانفرنس میں جوکچھ کہا اس کے علاوہ ان کے پاس کہنے کے لئے اور کچھ نہیں ہے۔

Leave a Reply

%d bloggers like this: