مقبوضہ جموں و کشمیر

دہلی کی عدالت کا سرینگر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے دفتر کوضبط کرنے کا حکم

aphcنئی دہلی28جنوری(کے ایم ایس)دہلی کی ایک عدالت نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں فنڈنگ سے متعلق ایک جھوٹے کیس میں سرینگر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے دفترکو ضبط کرنے کا حکم دیا ہے۔
کشمیر میڈیاسروس کے مطابق ایڈیشنل سیشن جج شیلندر ملک نے راج باغ سرینگر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے ہیڈ کوارٹر کو ضبط کرنے کا حکم دیا۔عدالت نے مضحکہ خیز آبزرویشن دی کہ حریت دفتر وہ جگہ ہے جہاں احتجاج اور فنڈنگ کے لئے حکمت عملی بنانے اور جموں کشمیر میں بدامنی پیدا کرنے کے لئے اجلاس ہوتے تھے۔بھارت کے بدنام زمانہ تحقیقاتی ادارے این آئی اے نے2017میں مختلف حریت رہنمائوں کو منی لانڈرنگ اور عسکریت پسندی کی فنڈنگ کے جھوٹے الزامات پر گرفتار کیا۔کل جماعتی حریت کانفرنس دو درجن سے زائد سیاسی، سماجی اور مذہبی تنظیموں کا ایک اتحاد ہے جو 9 مارچ 1993 کو تشکیل دیا گیا تھا۔

متعلقہ مواد

Leave a Reply

Back to top button
%d