APHC-AJK

کشمیریوں کی منصفانہ جدوجہد کی حمایت کا اعادہ کرنے پر”او آئی سی“ کا شکریہ

 

mehmood sagharاسلام آباد18 مارچ (کے ایم ایس) کل جماعتی حریت کانفرنس آزاد جموں و کشمیر شاخ کے کنوینر محمود احمد ساغر نے کشمیریوں کی منصفانہ جدوجہد کی حمایت کا اعادہ کرنے پر اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی ) کا شکریہ ادا کیا ہے۔
محمود احمد ساغر نے اسلام آباد میں جاری ایک بیان میں کہا کہ موریطانیہ کے شہر Nouakchott, میں او آئی سی کے رابطہ گروپ کے اجلاس کے بعد جاری ہونے والے مشترکہ اعلامیہ نے بھارت کے غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر کے مظلوم عوام کے حوصلے بلند کیے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام بھارتی مظالم کو بے نقاب کرنے اور تنازعہ کشمیر کے حل کی اہمیت کو اجاگر کرنے پر او آئی سی کے شکر گزار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری حریت قیادت مسلسل تنازعہ کشمیر کے حل کا مطالبہ کر رہی ہے جس سے جنوبی ایشیا میں امن کو شدید خطرہ لاحق ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ عالمی برادری اس معاملے کی حساسیت کا احساس کرتے ہوئے اس حوالے سے اقدامات کرے گی۔
یا درہے کہ او آئی سی کے رابطہ گروپ نے Nouakchott میں اپنے اجلاس میں منظور کیے گئے مشترکہ اعلامیے میں مقبوضہ جموںوکشمیرکی صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا۔ گروپ نے جموں و کشمیر کے تنازعہ پر او آئی سی کے موقف کی توثیق کی اور 5 اگست 2019 کے بھارت کے یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات کو پھر سختی سے مسترکیا۔ رابطہ گروپ نے او آئی سی کے سیکرٹری جنرل اور رکن ملکوں سے عالمی فورموں پر کشمیر کے منصفانہ کاز کے لیے اپنی آواز بلند کرنے کی درخواست کی۔
رابطہ گروپ نے بھارت سے مقبوضہ جموںوکشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو فوری طور پر بند کرنے اور اقوام متحدہ کی متعلقہ قراردادوں اور جموں و کشمیر کے عوام کی امنگوں کے مطابق تنازعہ کشمیر کے حل کے لیے اقدامات کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

متعلقہ مواد

Leave a Reply

Back to top button
%d