آزاد جموں و کشمیر کے وزیر اعظم کی طرف سے 1990 کے بعد کے مہاجرین کے لیے مختلف پیکجوں کا اعلان

مظفرآباد19 اگست (کے ایم ایس) آزاد جموں و کشمیر کے وزیراعظم سردار تنویر الیاس خان نے 1990 کے بعد کے کشمیری مہاجرین کے لیے مختلف پیکجز کا اعلان کیا ہے۔
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق پیکجز میں 100 تارکین وطن بچوں کو سرکاری ملازمتیں، 2000 روپے کی گرانٹ شامل ہے۔ تعلیم اور شادیوں کے لیے 1.5 ملین، قرضوں کی گرانٹ اور امبور پناہ گزین کیمپ میں لڑکیوں کے مڈل اسکول کا قیام شامل ہیں۔
آزاد جموں و کشمیر کے وزیراعظم نے یہ اعلان جمعہ کو مظفرآباد کے نواح میں واقع امبور مہاجر کیمپ میں منعقدہ خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ سردار تنویر الیاس خان نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مہاجر برادری کی قربانیوں کو سراہا جنہیں بھارتی فوج نے اپنا گھر بار چھوڑنے پر مجبور کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ مہاجرین ایک عظیم مقصد کے لیے اپنے گھر بار چھوڑآئے ہیں۔ انہوں نے مہاجرین کو تسلی دی اور کہا کہ حکومت کو کمیونٹی کو درپیش مسائل کی سنگینی کا احساس ہے۔ وزیر اعظم نے مہاجرین کے گزارہ الاو¿نس میں اضافے کا باضابطہ نوٹیفکیشن مہاجرین نمائندے چوہدری فیروز الدین کے حوالے کرتے ہوئے نے کہا کہ مہاجروں کو تنہا نہیں چھوڑا جائے گا، ملازمتوں میں انکے کے کوٹے پر 100 فیصد عملدرآمد یقینی بنایا جائے گا۔ حکومت آزاد جموںوکشمیر مہاجرین کو پختہ مکانات فراہم کرنے کے علاوہ انہیں زندگی کی دیگر بنیادی سہولیات فراہم کرنے کے لیے اپنے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے گی۔سردار تنویر الیاس خان نے متعلقہ حکام کو امبور مہاجر کیمپ میں قبرستان کے لیے 80 کنال اراضی مختص کرنے کی بھی ہدایت کی۔انہوں نے کہا کہ وزراءکی ایک کمیٹی بنائی جائے گی جو 10 دن کے اندر مستحقین اور ضرورت مندوں میں رقم تقسیم کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ مہاجرین کو 30 ملین روپے کے قرضے دیئے جائیں گے جس میں سے فی کس 10 لاکھ روپے دیئے جائیں گے۔آزاد جموں و کشمیر کے وزیر اعظم نے کہا کہ راڑہ اور بسنارا مہاجر کیمپوں میں رہنے والے مہاجرین بھی اعلان کردہ سکیموں کے اہل ہوں گے۔ انہوں نے بھارت کو ایک فسطائی ریاست قرار دیا جس کی قیادت مودی کر رہے ہیں اور کہا کہ بھارت کا نام نہاد سیکولر چہرہ آج دنیا کے سامنے بے نقاب ہو رہا ہے۔تقریب سے آزاد جموں و کشمیر کے وزراءخواجہ فاروق احمد، دیوان علی خان چغتائی، چوہدری محمد رشید، چوہدری فیروز الدین، گوہر کشمیری، عاطف جان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔مہاجر برادری کے نمائندوں نے گزارہ الاو¿نس بڑھانے پر سردار تنویر الیاس خان کا شکریہ ادا کیا۔
یاد رہے کہ 90 کے مقبوضہ جموںوکشمیر کے مہاجرین کو ماہانہ 2 ہزار فی کس ملتے تھے لیکن اب انہیں ماہانہ بنیادوں پر 35سو روپے فی فرد ملیں گے۔

Leave a Reply

%d bloggers like this: