بھارت

تامل ناڈو میں سکول پرنسپل نے دلت طلباءکو بیت الخلاءصاف کرنے پر مجبور کردیا

نئی دہلی، 04 دسمبر (کے ایم ایس)بھارتی ریاست تمل ناڈو کے ضلع ایروڈمیں ایک سکول پرنسپل نے دلت طلباءکو بیت الخلا صاف کرنے پر مجبور کردیا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق طالب علم کی والدہ نے سکول پرنسپل کے خلاف شکایت درج کرائی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق5ویں کلاس کے طالب علم کی والدہ نے اپنی شکایت میں کہا کہ پرنسپل گیتا رانی نے صرف درج فہرست ذات (ایس سی) …

تفصیل۔۔۔

بھارت: اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشدکی شکایت پر چار مسلمانوں سمیت چھ پروفیسر فارغ

  اندور04دسمبر(کے ایم ایس):بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے ضلع اندور میں آر ایس ایس کی طلباء تنظیم اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد کی شکایت پر ایک سرکاری کالج کے چار مسلمانوں سمیت 6 پروفیسروں کوفارغ کرکے ان کے خلاف تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔ اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد نے ان پروفیسروں پر مذہبی انتہا پسندی کو فروغ دینے سمیت کئی الزامات لگائے تھے۔ اے بی وی پی نے اس سلسلے میں …

تفصیل۔۔۔

بھارتی فلم فیسٹول کے دیگر3 ججوں کی دی کشمیر فائلز کے بارے میں جیوری سربراہ کے بیان کی حمایت

نئی دہلی04دسمبر(کے ایم ایس)برٹش اکیڈمی آف فلم اینڈ ٹیلی ویژن آرٹس کے فاتح جینکو گوتونے جو بھارت میں انٹرنیشنل فلم فیسٹیول کے پانچ رکنی جیوری کا حصہ تھے، کہا ہے کہ وہ اور ان کے دو ساتھی جج فیسٹول کی اختتامی تقریب میںجیوری کے چیئرپرسن ندو لیپڈ کے اس بیان کے ساتھ کھڑے ہیں جس میں انہوں نے فلم ” دی کشمیر فائلز” کومحض پروپیگنڈا قراردیاتھا۔ کشمیر میڈیا سروس کے …

تفصیل۔۔۔

بھارت : آٹھویں جماعت کی طالبہ سے دو ہم جماعت ساتھیوں کی زیادتی

ممبئی04دسمبر(کے ایم ایس)بھاتی شہرممبئی میں دو لڑکوں نے اپنے اسکول کے کلاس روم میں اپنی 13سالہ ہم جماعت طالبہ کی عصمت دری کی جس کے بعد پولیس نے ان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ایک سرکاری عہدیدارنے بتایا کہ لڑکی کو اس کے دو ہم جماعت ساتھیوں نے اس وقت جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جب ان کے ساتھی طلباء ڈانس کی مشق کے لیے …

تفصیل۔۔۔

بی جے پی حکومت نے عصمت دری کے مجرم رہاکردیے لیکن پتھرائو کے ملزموں کی ضمانت کی مخالفت کررہی ہے

نئی دہلی 03دسمبر(کے ایم ایس) بھارتی ریاست گجرات میں بی جے پی کی ہندوتوا حکومت نے بلقیس بانو عصمت دری کیس کے مجرموںکو معافی دے کر رہا کر دیا ہے لیکن گودھرا ٹرین آتشزدگی سے متعلق مقدمے میں ان لوگوں کی ضمانت کی بھی مخالفت کر رہی ہے جن پر صرف پتھرائو کا الزام ہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق یہ ملزمان تقریبا 17سال سے جیل میں نظربند ہیں جبکہ ان …

تفصیل۔۔۔

عمر خالد، خالد سیفی دہلی فسادات مقدمے میں بری، عدالت نے فیصلہ سنادیا

نئی دہلی 03دسمبر(کے ایم ایس)بھارت میں دہلی کی کرکرڈومہ عدالت نے جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے سابق طالب علم عمر خالد اور خالد سیفی کو شمال مشرقی دہلی میں فروری 2020کے فسادات سے متعلق ایک مقدمے میں بری کر دیا ہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق عمر خالد اور خالد سیفی کے خلاف مقدمہ ایک پولیس اہلکار کے اس بیان میں درج کیاگیاتھا کہ وہ فروری 2020میں دہلی کے علاقے چاند …

تفصیل۔۔۔

امریکہ کیطرف سے بھارت کی طرفداری، پاکستان اور چین کے خلاف تعصب کا مظاہرہ

بھارت میں مذہبی آزادی کے حوالے سے”یو ایس سی آئی آر ایف“ کی سفارشات نظرانداز کر دیں اسلام آباد03 دسمبر (کے ایم ایس) امریکا بھارت کی طرفداری اور پاکستان اور چین کے خلاف تعصب کا مظاہرہ کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق امریکہ کے اس افسوسناک طرز عمل کا مظاہرہ ایک مرتبہ پھر اس وقت دیکھنے میں آیا جب امریکی محکمہ خارجہ …

تفصیل۔۔۔

کرناٹک :اونچی ذات کے ہندووں کیطرف کی گئی تذلیل سے دلبرداشتہ دلت نوجوان نے خودکشی کر لی

بنگلورو 03 دسمبر (کے ایم ایس) بھارتی ریاست کرناٹک کے ضلع کولار میں ایک دلت نوجوان نے اونچی ذات کے ہندوﺅںکی طرف سے کی جانے والی تذلیل سے دلبرداشتہ ہو کر درخت سے پھندا لگا کر خوکشی کر لی۔ اونچی ذات کے چار ہندوو¿ں نے ضلع کے علاقے بیواہلی کے دلت نوجوان ادے کرن کو موٹر سائیکل پر اوورٹیک کرنے پر درخت سے الٹا لٹکا کر باندھ دیا اور اسکی …

تفصیل۔۔۔

مسلمانوں کی رواداری کیوجہ سے آج بھارت میں ہندو اکثریت میں ہیں، سابق جج

بنگلورو03 دسمبر (کے ایم ایس)بھارتی ریاست کرناٹک میں ایک سابق جج وسنت ملا ساولگی نے کہا ہے کہ بھارت میں اس وقت ہندو اس لیے باقی ہیں کہ مسلم حکمرانوں نے انہیں باتی رہنے دیا ۔انہوں نے کہا کہ اگر مغل دور میں مسلمانوں نے ہندوﺅں کی مخالف کی ہوتی تو بھارت میں ایک بھی ہندو باقی نہ رہتا۔ وسنت ملاساولگی نے یہ بات کرناٹک کے شہر وجیہ پورہ میں …

تفصیل۔۔۔

بھارت میں رواں برس عیسائیوں کیخلاف نفرت انگیز جرائم میں اضافہ ہواہے، یو سی ایف

نئی دہلی03 دسمبر (کے ایم ایس)رواں برس( 2022) بھارت میں عیسائیوں کے خلاف سب سے زیادہ نفرت انگیز جرائم دیکھنے میں آئے ہیں۔ اقلیتی برادری کے ارکان کے خلاف تشدد کے 511 واقعات ریکارڈ کیے گئے ہیں۔ نئی دہلی میں قائم یونائیٹڈ کرسچن فورم (یو سی ایف) کے جاری کردہ اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ بھارت میں عیسائیوں کے خلاف تشدد اب تک کی بلند ترین سطح …

تفصیل۔۔۔